سٹیسیاست

چرچز اور مسیحی برادری کے گھروں کو دیکھ کر صدمہ ہوا،اقلیتوں کا تحفظ یقینی بنایا جائے

صدر مملکت کی جانب سے ٹویٹ تشویشناک، تحقیقات کر کے اصل حقائق سامنے لائے جائیں

نگران حکومتیں آئینی تقاضوں کو پورا کر یں اور عام انتخابات کے انعقاد کو بر وقت یقینی بنائیں. جماعت اسلامی پنجاب و سطی

لاہور(خبر نگار) امیر جماعت اسلامی پنجاب وسطی محمد جاوید قصوری کہا ہے کہ چرچز اور مسیحی برادری کے گھروں کو دیکھ کر صدمہ ہوا،حکومت اور قانون نافذ کرنے والے ریاستی ادارے امن و امان کو قائم رکھنے میں ناکام رہے۔اقلیتوں کے ساتھ زیادتی کرنے والے سخت ترین سزاوں کے مستحق ہیں۔پاکستان کی سلامتی کے لئے سٹرکوں پر عدالتیں قائم کرنا ایک خطرناک عمل ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے مختلف تقریبات سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے سیاسی صورتحال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مزید کہا کہ صدر مملکت عارف علوی کی جانب سے ٹویٹ لمحہ فکریہ ہے، اس معاملے کی جلد از جلد تحقیقات کرواتے ہوئے اصل حقائق قوم کے سامنے لائے جائیں۔ملکی سلامتی کو داو پر لگا دیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ نگران حکومتیں آئینی تقاضوں کو پورا کر یں اور عام انتخابات کے انعقاد کو بر وقت یقینی بنائیں۔ الیکشن کا التواء ملک کے اندر انتشار، افراتفری اور سیاسی محاذآرائی کو ہوا دے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ مطلوبہ نتائج کے لئے اوچھے ہتھکنڈوں کا استعمال قابل مذمت ہے۔ نگران سیٹ اپ کو طول دینے کی کوشش کی گئی کو جماعت اسلامی عوام کی ترجمانی کرتے ہوئے سٹرکوں پر بھر پور احتجاج کرے گی۔ملک و قوم اس وقت انتہائی نازک دور سے گزر رہے ہیں۔ محمد جاوید قصوری نے کہا کہ پی ٹی آئی اور اتحادی حکومت ملک وقوم کے ساتھ ساتھ جمہوریت کو نا قابل تلافی نقصان پہنچایا گیا۔ترقی و خوشحالی اور معاشی استحکام کے لئے انتشار کی سیاست کا خاتمہ کرنا ہو گا۔ ملک دیوالیہ ہونے کے قریب پہنچ چکا ہے۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ بے یقینی اور سیاسی عدم استحکام کی فضا کو ختم کیا جائے۔ ملک کو آئین کے مطابق چلانا ہوگا۔ عدالتی فیصلوں کا احترام ہونا چاہیے۔ قوم میں سیاسی نفرت کے بیج بو نے کے نتائج خطرناک ہوں گے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Related Articles

Back to top button