جرم و سزاسٹی

آئی جی پنجاب ڈاکٹر عثمان انورسے ڈی پی او اوکاڑہ منصور امان کی ملاقات، اوکاڑہ پولیس کی مجموعی کارکردگی کا جائزہ لیا

رواں برس اوکاڑہ میں قتل، ڈکیتی، اغوا برائے تاوان جیسے سنگین جرائم کے درج 23 کیسوں میں سے 21کو ورک آؤٹ کرلیا گیا۔

اغواء برائے تاوان کے 05 کیس حل کر،بلائنڈ مرڈر کے 08، رابری مرڈر کے10اور ڈکیتی کے21کیسز ورک آؤٹ۔ 1625اے کیٹیگری سمیت 4960 اشتہاری ملزمان گرفتار،ڈکیتی کے35واقعات ورک آؤٹ، 25ملین سے زائد مال مسروقہ برآمد،فورس کو متحرک اور فعال بنانے کے لئے ان کی ویلفیئر اور پروموشن سے نہایت مثبت نتائج سامنے آئے ہیں، آئی جی پنجاب

لاہور(خبر نگار) انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب ڈاکٹر عثمان انور نے کہاہے کہ صوبے کے تمام اضلاع میں ڈکیتی، قتل، اغوا برائے تاوان سمیت دیگر سنگین جرائم کے قلع قمع کیلئے پولیس ٹیمیں شب و روز مصروف عمل ہیں، اشتہاری مجرمان کی گرفتاری کیلئے خصوصی مہم جاری ہے جبکہ ساتھ ہی ساتھ منشیات کی لعنت کو جڑ سے ختم کرنے کیلئے انٹیلی جنس بیسڈ آپریشنز میں تیزی لائی گئی ہے۔ آئی جی پنجاب نے کہاکہ آرپی اوز، ڈی پی اوز کی زیر نگرانی انسداد جرائم اور کمیونٹی پولیسنگ کے فروغ کیلئے ترجیحی اقدامات جاری ہیں جس سے پولیس اور شہریوں کے درمیان اعتماد کی فضا مضبوط ہورہی ہے۔ آئی جی پنجاب ڈاکٹر عثمان انور سے ڈی پی او اوکاڑہ منصور امان اور ان کی ٹیم نے سنٹرل پولیس آفس میں ملاقات کی، آئی جی پنجاب نے پولیس اسٹیشن ڈائریز کے سلسلہ میں اوکاڑہ پولیس کی مجموعی کارکردگی کا جائزہ لیا۔ ڈی پی او اوکاڑہ نے ضلع میں اغوا برائے تاوان، بلائنڈ مرڈر، ڈکیتی اور سنگین جرائم کی صورتحال بارے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ رواں برس اوکاڑہ میں قتل، ڈکیتی، اغوا برائے تاوان جیسے سنگین جرائم کے درج 23 کیسوں میں سے 21کو ورک آؤٹ کرلیا گیا، اغواء برائے تاوان کے 05 کیس حل کرتے ہوئے 09 ملزمان گرفتار، مغویان کو بحفاظت بازیاب کروالیا گیا، ایک کروڑ تاوان کیلئے اغوا ہونے والے بچے کو 24گھنٹوں سے کم وقت میں بحفاظت بازیاب کروایا۔ اسی طرح بلائنڈ مرڈر کے 08، رابری مرڈر کے10اور گھر میں ڈکیتی کے21کیسز ورک آؤٹ ہوئے، 1625اے کیٹیگری سمیت 4960 اشتہاری ملزمان گرفتار،ڈکیتی کے35واقعات ورک آؤٹ، 25ملین سے زائد مال مسروقہ برآمد کیا گیا۔ ڈی پی او اوکاڑہ منصور امان نے مزیدکہاکہ اوکاڑہ پولیس نے خواتین شہریوں کے تحفظ کیلئے خواتین اہلکاروں کے پٹرولنگ اسکواڈ“ ردا“ کا آغاز کیا۔ردا اسکواڈ میں شامل لیڈی پولیس بائیک رائیڈنگ، پٹرولنگ،ہجوم کنٹرول، سیلف ڈیفنس اور فرسٹ ایڈ فراہم کر رہی ہیں۔

آئی جی پنجاب ڈاکٹر عثمان انور نے کرائم کنٹرول، شہریوں کو خدمات کی بہترین فراہمی پر اوکاڑہ پولیس کی کارکردگی کو سراہا، انہوں نے کہا کہ فورس کو متحرک اور فعال بنانے کے لئے ان کی ویلفیئر اور پروموشن سے نہایت مثبت نتائج سامنے آئے ہیں، محنتی، فرض شناس اور قابل افسران واہلکاروں کی حوصلہ افزائی کا سلسلہ جاری رکھا جائے گا۔ اس موقع پراوکاڑہ پولیس کے ڈی ایس پیز، ایس ایچ اوز، انچارج آئی ٹی، سب انسپکٹر لیڈی عظمت نسیم سمیت دیگر افسران بھی موجود تھے۔ 

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Related Articles

Back to top button