سٹیصحت

آنکھوں میں کالا موتیا کی جلد تشخیص وعلاج کے لیے انگلیںڈ سے آئے ڈاکٹروں کا دورہ

ڈاکٹروں نے شوگر سے اور کالا موتیا سمیت دیگر امراض کے بارے ڈاکٹروں کو جدید ٹریننگ فراہم کی

لاہور (خبر نگار)پاکستان میں انکھوں میں کالا موتیا کے بڑھتے ہوئے مرض کی جلد تشخیص اور اس کے علاج معالجے میں بہتری کے لیے انگلیںڈ سے آئے معروف ڈاکٹروں نے لاہور جنرل ہسپتال کا دورہ کیا، دورے میں انگلینڈ کے ڈاکٹروں نے شوگر سے اور کالا موتیا سمیت دیگر امراض کے بارے ڈاکٹروں کو جدید ٹریننگ فراہم کی گئی ،لاہور جنرل ہپستال میں کالے موتیے کی تشخیص اور جدید طریقہ علاج بارے ایک آگاہی سمینار کا اہتمام کیا گیا، سمینار میں پروفیسر طیبہ گل، ڈاکٹر راشد ضیا ، ڈاکٹر عائشہ سلام ، پروفیسر معین سمیت دیگر ماہرین امراض چشم نے شرکت کی ،سیمینار میں انگلینڈ سے انے والے ڈاکٹر راشد ضیاع اور ڈاکٹرعائشہ نے خصوصی لیکچر دیا، ڈاکٹر عائشہ نے کہا کہ دنیا میں شوگر اور کالاموتیا سے بنیائی ختم ہوتی ہے ،اگر کالاموتیا ہو جائے تو 95 فیصد تک انکھ ضائع ہونے کے خطرات ہوتے ہیں، احتیاط سے بینائی ضائع ہونے سے روک سکتے ہیں ،طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ 40 سال سے زیادہ عمر کے افراد باقاعدگی سے اپنی انکھوں کا معائنہ کروائیں تاکہ کالا موتیا جیسے موذی مرض کی جلد تشخیص اور اس کا علاج ہو سکے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Related Articles

Back to top button