تعلیمسٹی

ویمن یونیورسٹی ملتان کے شعبہ شماریات کے زیر اہتمام ورکشاپ اختتام پذیر۔ ترجمان

تین روزہ ورکشاپ میں سافٹ ویئر ایس پی ایس ایس کے بارے میں لیکچر اور پریکٹیکل کرائے گئے ۔

ملتان(خبر نگار) ویمن یونیورسٹی ملتان کے شعبہ شماریات کے زیر اہتمام تین روزہ ورکشاپ اختتام پذیر ہوگئی ، ترجمان کے مطابق تین روزہ ورکشاپ میں سافٹ ویئر ایس پی ایس ایس (شماریاتی پیکیج برائے سماجی سائنس)کے بارے میں لیکچر اور پریکٹیکل کرائے گئے ورکشاپ کے افتتاحی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے مہمان خصوصی ڈاکٹر شاہدہ نے کہا کہ ریسرچ میں حقیقت کے قریب پہنچنے کےلئے ٹیکنالوجی استعمال بڑھتا جارہاہے جس سے ریسرچ کے نتائج بہترہوئے ہیں ویمن یونیورسٹی کے ڈیپارٹمنٹس اس بات کاادراک رکھتے ہیں کہ معیاری ریسرچ کےلئے جدیدٹولز کا استعمال وقت کی ضرورت ہے ایس پی ایس ایس (شماریاتی پیکیج برائے سماجی سائنس) ایک سافٹ ویئر پروگرام ہے جسے محققین مختلف شعبوں میں پیچیدہ ڈیٹا کے مقداری تجزیہ کے لیے استعمال کرتے ہیںیہ ورکشاپ اس سافٹ ویئر کے ماحول، بنیادی ڈیٹا کی تیاری اور انتظام، وضاحتی اعدادوشمار، اور عام شماریاتی تجزیہ ٹیسٹ بارے معلومات فراہم کرے گی یہ ورکشاپ ان لوگوں کے لیے ایک اچھی شروعات ہے جو ایس پی ایس ایس میں نئے ہیں ورکشاپ کی فوکل پرسن اور چیئرپرسن شعبہ شماریات ڈاکٹرطاہرہ بانو قاسم نے کہا کہاس کورس کا مقصد شرکاء کوشماریاتی پیکیج برائے سماجی علوم کے عملی علم سے آراستہ کرنا اور علمی اور صنعتی تحقیقی کارکردگی دونوں کو بڑھانے میں اس کی اہمیت کو ظاہر کرنا ہے۔ یہ کورس محققین کوایس پی ایس ایس کے ضروری ٹولز، تکنیکوں اور طریقوں سے واقف کرنے کے لیے ڈیزائن کیا گیا ہےشرکا اس میں مہارت حاصل کر کے، محققین اپنے ڈیٹا کے تجزیہ اور پیشکش کی صلاحیتوں کو نمایاں طور پر بہتر بنا سکتے ہیں آج کی ڈیٹا سے چلنے والی دنیا میں، بامعنی بصیرت حاصل کرنے، باخبر فیصلے کرنے، اور جدت طرازی کو آگے بڑھانے کے لیے ڈیٹا کا موثر تجزیہ ضروری ہے۔ ایس پی ایس ایس ایک طاقتور ٹول ہے جو تحقیق میں ایک صنعتی معیار بن گیا ہے، اور اس میں مہارت حاصل کرنا ہر اس شخص کے لیے ضروری ہے جو اپنے شعبے میں نمایاں اثر ڈالنا چاہتے ہیں۔ ورکشاپ تحقیقی کوششوں کے لیے گیم چینجر ثابت ہوگی۔ ورکشاپ میں ایس پی ایس ایس سافٹ ویئر انسٹال کرنا، ڈیٹا فائلوں کی تشکیل، ڈیٹا مینجمنٹ اور ہینڈلنگ، ایس پی ایس ایس کے ساتھ کراس ٹیبلیشن تجزیہ کرناسیکھایاگیا جبکہ ڈیٹا انٹری اور ڈی کوڈنگ کی پریکٹس کرائی گئی اور ہینڈز آن پریکٹس کے ساتھ وضاحتی اور تخمینی تجزیہ کیا گیا آخر میں ڈاکٹر طاہرہ بانو قاسم نے شرکاء میں شیلڈز اور اسناد تقسیم کیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Related Articles

Back to top button