تعلیمسٹیصحت

ویٹرنری یونیورسٹی کے زیر اہتمام ہیلتھ سیکیو رٹی کے مو ضو ع پر دو روزہ بین الاقوا می کانفرنس کا آ غا ز

لاہور (خبر نگار) یونیورسٹی آف ویٹرنری اینڈاینیمل سائنسز لاہور کے ڈیپا رٹمنٹ آف ویٹر نری میڈیسن نے سی پیک اور ہا ئیر ایجو کیشن کمیشن کے با ہمی اشتراک سے ہیلتھ سیکیو رٹی کے مو ضو ع پر دو روزہ بین الاقوا می کانفرنس کا آ غاز لا ہور کے مقا می ہو ٹل میں کیا۔ افتتا حی تقریب کی صدارت وفا قی وزیر برا ئے پلا ننگ اینڈ ڈیو یلپمنٹ خصو صی اقدا مات مسٹر احسن اقبال نے کی جبکہ دیگر اہم شخصیا ت میں ایڈوا ئزر ہا ئیر ایجو کیشن کمیشن (ریٹا ئرڈ) لیفٹینینٹ جنرل محمد اصغر، سیکر ٹری لا ئیو سٹا ک محمد مسعود انور، وائس چانسلر ویٹر نری یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر نسیم احمد، وا ئس چانسلر ایجو کیشن یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر طلعت نصیر پاشا، ممبر پرو ڈکشن سیکٹر ونگ پلاننگ اینڈ ڈیو یلپمنٹ بورڈمسٹر اسلم جا وید،ڈائریکٹر جنرل (سی پیک) ہا ئیر ایجو کیشن کمیشن ڈاکٹر صفدر علی شاہ، ویٹر نری یونیورسٹی کے صا بق وا ئس چانسلرز پروفیسر ڈاکٹر منظور احمد اور پروفیسر ڈاکٹر محمد نوازکے علا وہ پا کستان سمیت دنیا بھر کے مختلف مما لک جن میں امریکہ، چا ئنہ، متحدہ عر ب اما رات، کوریااور سعو دی عرب سے تحقیق کارو ں،ویٹر نیر ین،پبلک ہیلتھ سپیشلسٹ،میڈیکل سپیشلسٹ،ریسرچ سکا لرز، اسا تذہ، طلبہ، ما ہرین اور پرو فیشنلز کی بڑ ی تعداد نے ظا ہری طور پر اور ویڈیو لنک کے زریعے شر کت کی۔

افتتا حی تقریب سے خطاب کرتے ہو ئے وفا قی وزیر احسن اقبال نے لا ئیو سیکٹر کو فعال بنانے کے لیئے ملک میں دور حا ضر کی جدید ٹیکنا لو جی اور بیسٹ فارم پریکٹس کو اپنا نے کی ضرورت پر زور دیا۔اُ نہو ں نے کہا کہ جدید تحقیق اور منا سب فارم مینجمنٹ ملک میں دودھ کی پیداوار کو خا طر خواہ بڑ ھا نے کے لیئے انتہا ئی سود مند ہے۔اُ نہو ں نے مزید کہا کہ تعلیمی ادارو ں اور انڈسٹریو ں کا الحا ق جدید بزنس کے آئیڈیاز کو عملی جامہ پہنا نے کے لیئے بے حد ضروری ہے۔انہو ں نے کہا کہ ملک کو معا شی طور پر مستحکم بنانے کے لیئے ضروری ہے کہ ہم فصلو ں کی پیداوار کے ساتھ ساتھ پاکستانی دودھ اور گوشت سے بنی مصنو عات کو بھی دوسرے ملکو ں میں ایکسپو رٹ کریں تا کہ زر مبا دلہ کما کر ہما را ملک خو شحال ہو۔ احسن اقبال نے کہا کہ مو سمیا تی تبدیلی پاکستان میں ایک اہم مسئلہ ہے جو کہ پچھلے سال ایک بڑے سیلاب کی وجہ بنا جس کی تبا ہ کا ریو ں سے بڑ ے پیما نے پر مویشی پال حضرات معا شی بحران کا شکار ہو ئے۔اُ نہو ں نے معلو ماتی مو ضو ع پر کانفرنس کا انعقاد کروانے پر ویٹر نری یونیورسٹی لیڈر شپ کی تعریف کی اور مبا رکباد بھی دی۔

پروفیسر ڈاکٹر نسیم احمد نے کہا کہ کا نفرنس میں ریبیز (با ولا پن)، جا نورو ں سے انسا نو ں میں منتقل ہو نے والی بیما ریو ں،مو سمی تغیر تبدل،فو ڈ سیفٹی و فو ڈ سیکیو رٹی، پا نی کی کمی و مینجمنٹ،میل نیو ٹریشن، بڑ ھتے ہو ئے بچو ں میں سٹنٹنگ کے مسا ئل، خوراک کو ضا ئع ہونے سے بچا نے اور ون ہیلتھ کے تحت انسا نو ں و جا نوروں کی صحت سے متعلقہ مختلف مو ضو عات زیر بحث لا ئے جائیں گے۔اُ نہو ں نے کہا کہ گلو بل وارمنگ کے باعث درجہ حرارت دن بدن بڑ ھ رہا ہے جو کہ ملک میں گلیشیئر پگھلنے اور سیلاب آنے کی بنیا دی وجہ ہے جس سے ملک میں زرعی پیداوار میں کمی ہو رہی ہے اور بڑ ھتی ہو ئی آ بادی کے پیش نظر ضرورت سے کم پیدا وار ہے۔اُ نہو ں نے کہا کہ کرو نا وبا ء کے دوران ویٹر نری یونیورسٹی نے سات لاکھ سے زا ئد نمو نو ں کے مفت ٹیسٹ کیئے اور اس حوا لے سے یونیورسٹی میں با ئیو سیفٹی لیول تھری لیب قائم کی جس نے انسا نی فلا ح کے حو الے سے حکو مت پنجاب کے شا نہ بشا نہ دن رات کام کیا۔ انہو ں نے مزید بتا یا کہ ویٹر نری یونیورسٹی نے پچھلے سال ملک میں آنے والے سیلاب کے دوران متا ثرین کی مدد کے لیئے اپنی امدادی ٹیمیں ملک کے چا رو ں صو بو ں میں بھیجی جنہو ں نے متا ثرین کی بلا تفریق شفاف طریقے سے مدد کی اور انسا نیت کی ایک شاندار مثا ل قا ئم کی۔ (ریٹا ئرڈ) لیفٹینینٹ جنرل محمد اصغر نے کہا کہ سی پیک میں کارو بار ی لحا ظ سے تر قی کے بے پناہ موا قع مو جود ہیں نیز چائنیز کے ساتھ ملکر کام کرنے اور ایک دوسرے کے تجربات سے مستفید ہو نے کا مو قع بھی ملے گا۔طلعت نصیر پا شا نے کہا کہ شعبہ لا ئیو سٹاک ملک میں خوراک کے حوا لے سے بنیا دی جزو کی حیثیت رکھتا ہے لہذا غریب مو یشی پال حضرات کے جانورو
ں کی پیدا وار بڑ ھانے کے لیئے ویکسین اورعلا ج معالجے کی زیا دہ سے زیا دہ سہو لیات ان کی دہلیز پر مہیا کرنے کی ضرورت ہے تا کہ وہ معا شی طور پر خو شحال ہوں۔سیکر ٹری لا ئیو سٹاک نے کہا کہ شع بہ لا ئیو سٹاک کو کلا ئمیٹ چینج، منہ کھر بیما ری، فو ڈ سیفٹی اینڈ سیکیو رٹی جیسے چیلنجز کا سامنہ ہے نیز ملک میں بڑ ھتی ہو ئی آ بادی کی پیش نظر خوراک کی پیدا وار کو بھی بڑ ھانے کی ضرورت ہے۔ویٹر نری یو نیورسٹی کے زیر اہتمام کانفرنس کا انعقاد ان مسا ئل پر قا بو پانے اور مستقبل کے حوالے سے روڈڈ میپ بنانے اور پا لیسیاں مرتب کرنے کے لیئے انتہا ئی ضروری ہے۔
بین الا قوا می کانفرنس میں ما ہرین ون ہیلتھ کے حوا لے سے ہیلتھ سیکیو رٹی میں اُ بھر تے ہو ئے مسا ئل سے متعلقہ جدیدتحقیقی اُصو لو ں پر مبنی اپنے اپنے خیا لا ت کا اظہار کر یں گے۔دو روزہ کانفر نس میں 10 ٹیکنیکل سیشنزاورپوسٹرپریزنٹیشنوں کا انعقاد کیا جا ئے گا جبکہ انڈسٹری پارٹنرز نے کانفرنس میں سٹالز بھی لگا ئے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Related Articles

Back to top button