انٹر نیشنلپاکستان

ایران اور سعودی عرب کے تعلقات کی بحالی کا خیر مقدم کرتے ہیں،پاکستان

خطے میں امن کے خواہشمند ،امن کی بحالی جیسے اقدامات کی سپورٹ کرینگے،ایٹمی پروگرام کا معاملہ کسی مالیاتی ادارے کے ساتھ ایجنڈے پر نہیں ،ترجمان دفتر خارجہ

بھارت اور یورپ میں مسلمانوں کیخلاف نفرت انگیز جرائم میں اضافے پر تشویش ہے،کفایت شعاریپرحکومتی پالیسی پر عمل پیرا ہیں‘ ممتاز زہرہ بلوچ کی پریس کانفرنس

اسلام آباد (بیورو رپورٹ‘ قوت)پاکستان نے ایران اور سعودی عرب کے تعلقات کی بحالی کا مقدم کیا ہے اور کہا کہ خطے میں امن کے خواہش مند ہیں ،امن کی بحالی جیسے اقدامات کی بھر پورسپورٹ کریں گے ،ایٹمی پروگرام کا معاملہ کسی مالیاتی ادارے کے ساتھ ایجنڈے پر نہیں ،ایٹمی پروگرام پر قیاط آرائیوں پر کوئی تبصرہ نہیں کیا جا سکتا ۔بھارت اور یورپ میں مسلمانوں کیخلاف نفرت انگیز جرائم میں اضافے پر تشویش ہے،وزیراعلیٰ کرناٹک کے ریمارکس خطے میں منفی اثرات مرتب کررہے ہیں ،کشمیر قیادت کی غیر قانونی حراست اور انہیں ہراساں کئے جانے کا سلسلہ بند ہونا چاہیے ۔ترجمان دفتر خارجہ ممتاز زہرہ بلوچ نے ہفتہ وار پریس بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری کا موریطانیہ کا دورہ مکمل ہوگیا ہے

،وزیر خارجہ نے او آئی سی وزرائے خارجہ کونسل کی صدارت موریطانیہ کے حوالے کی،فلسطین اور کشمیر کا معاملہ اجاگر کیاگیا،افغانستان کی صورتحال پر بھی بات ہوئی ،وزیر خارجہ نے او آئی سی رابطہ گروپ برائے کشمیر کے اجلاس میں بھی شرکت کی ،وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری بین الاقوامی سطح پر پاکستان کی نمائندگی کرتے ہیں،کشمیر،اسلاموفوبیا اور پاکستان کے موقف کی بات کرتے ہیں، وزیر خارجہ کا کام ہی پاکستان کی نمائندگی اور عالمی برادری سے رابطے رکھنا ہے،انہوںنے کہا کہ پاکستان کے سفیر برائے آسٹریا کو آئی سی کا اسسٹنٹ سیکرٹری جنرل برائے سائنس منتخب کیا گیا،وزیر مملکت حنا ربانی کھر نے لندن میں دولت مشترکہ اجلاس میں شرکت کی،15 مارچ کو پاک امریکہ توانائی ڈائیلاگ اسلام آباد میں منعقد ہوئے،پاک امریکہ گرین الائنس فریم ورک کے تحت دونوں ملکوں نے قابل تجدید توانائی پر توجہ مرکوز کی،ترجمان دفتر خارجہ کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان اور امریکہ کے درمیان موسمیاتی تبدیلی کے حوالے سے بھی بات چیت ہوئی،پاکستان اور آسٹریلیا کے حکام کے درمیان اعلی سطح پر بات چیت کا 8 واں دور اسلام آباد میں ہوا،پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان مائیگریشن،موسمیاتی تبدیلی سمیت اہم امور پر بات چیت ہوئی، دونوں ممالک کے درمیان ٹریڈ ڈائیلاگ کا دور بھی اسلام آباد میں ہوا،پاک آسٹریلیا ڈائیلاگ میں باسمتی چاول کی جیوگرافک ٹیگنگ پر بھی بات چیت ہوئی، ترجمان دفتر خارجہ کا مزید کہنا تھا کہ ایس سی او اجلاسوں میں جسٹس منیب اختر اور وفاقی وزیر خرم دستگیر نے پاکستان کی نمائندگی کی،آج وزیر اعظم کے مشیر عون چوہدری بھی ایس سی او اجلاس میں ویڈیو لنک پر پاکستان کی نمائندگی کریں گے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Related Articles

Back to top button