انٹر نیشنلتعلیمسٹی

یونیورسٹیز کی عالمی درجہ بندی ، یو ای ٹی دنیا کی 300 بہترین جامعات میں شامل

گذشتہ 3 برس سے یونیورسٹی کی کیو ایس رینکنگ میں مسلسل بہتری ہورہی ہے
سال 2021 میں یو ای ٹی 376، 2022 میں 324 ویں نمبر پر جبکہ اس برس 279 ویں نمبر پر پہنچ گئی

لاہور(خبر نگار)یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی لاہور دنیا بھر کی 300 بہترین یونیورسٹیز میں شامل ہوگئی ہے ۔ تازہ ترین فہرست کے مطابق یونیورسٹی نے اپنی درجہ بندی میں 47 درجے بہتری کی ہے ۔ گذشتہ 3 برس سے یونیورسٹی کی کیو ایس رینکنگ میں مسلسل بہتری ہورہی ہے ۔سال 2021 میں یو ای ٹی 376، 2022 میں 324 ویں نمبر پر جبکہ اس برس 279 ویں نمبر پر پہنچ گئی ۔سال 2019 میں یو ای ٹی ٹاپ450 میں شامل تھی ۔ کیو ایس رینکنگ میں انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی ، الیکٹریکل اور الیکٹرانک ،مکینیکل، ایروناٹیکل اور مینوفیکچرنگ کے تحت سات مضامین میں سے صرف دو میں ٹاپ 500 میں یونیورسٹیز میں شامل ہے ۔ سال 2023 کی رینکنگ میں یو ای ٹی چار مضامین میں ٹاپ350 اور ایک میں ٹاپ450 میں ہے۔ تازہ ترین درجہ بندی میں، یونیورسٹی نے مکینیکل انجینئرنگ اور کیمیکل انجینئرنگ میں ہر ایک میں 50 پوائنٹس کا اضافہ کیا ہے۔کیو ایس رینکنگ کے مطابق یونیورسٹی عالمی درجہ بندی میں پیٹرولیم انجینئرنگ میں 51 ویں نمبر پر ،الیکٹریکل اور الیکٹرانک انجینئرنگ 300 جامعات میں سے 251 ویں نمبر پر ، مکینیکل، ایروناٹیکل، اور مینوفیکچرنگ انجینئرنگ میں بھی 251 ویں نمبر پر رہی ۔ اسی طرح اگر ملکی جامعات میں یونیورسٹی کا جائزہ لیا جائے تو پیٹرولیم انجینئرنگ میں پہلا ،کیمیکل انجینئرنگ اور مکینیکل، ایروناٹیکل، اور مینوفیکچرنگ انجینئرنگ میں دوسرا؛ الیکٹریکل انجینئرنگ میں تیسرا، اور کمپیوٹر سائنس اور انفارمیشن سسٹم میں چھٹا نمبر ہے ۔
عالمی درجہ بندی کی رپورٹ منظر عام پر آنے کے بعد وائس چانسلر ڈاکٹر منصور سرور نے طلبا ، طالبات اور اساتذہ کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ کیو ایس رینکنگ میں بہتری یونیورسٹی میں تدریس کے معیار اور اعلیٰ تعلیمی معیار کو ظاہر کرتا ہے۔ یونیورسٹی میں زیر تعلیم طلبہ کا صنعتوں سے رابطہ ، انٹرن شپ اور ملازمت کے مواقع دئیے جاتے ہیں ۔ جو کہ انڈسٹری کے یونیورسٹی پر اعتماد کی علامت ہے ۔وائس چانسلر کے مطابق یونیورسٹی بہترین تحقیق اور تحقیقی مقالوں کا معیار بہتر بنانے پر توجہ دے رہی ہے ۔ فیکلٹی نے 2022 کے دوران ایچ ای سی کے نیشنل ریسرچ پروگرام برائے یونیورسٹیزکے ذریعے تاریخی اعلیٰ 59 ایسی گرانٹس حاصل کیں، جو یونیورسٹی کی تاریخ میں سب سے زیادہ ہے۔ یہی نہیں بلکہ یونیورسٹی نے سی پیک اور گلوبل چیلنج فنڈ کے ریسرچ گرانٹس بھی جیتے ہیں۔ یونیورسٹی نے دو سال قبل ٹیوشن فری پی ایچ ڈی پروگرام پیش کرنا شروع کیا۔ اس سے اعلیٰ معیار کی تحقیق اور زیادہ معیاری اشاعتوں کا اثر پڑے گا۔ وی سی نے یونیورسٹی میں تعلیمی معیار بلند کرنے پر فیکلٹی اور طلباء کی تعریف کی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Related Articles

Back to top button