سٹی

لیسکو میں بجلی چوروں کیخلاف گیارویں روز بھی آپریشن جاری

آپریشن کے دوران تمام سرکل میں 755 کنکشنز بجلی چوری میں ملوث پائے گئے

لاہور (خبر نگار)
لیسکو میں بجلی چوروں کیخلاف گیارویں روز بھی آپریشن کیا گیا۔ترجمان لیسکو
وزیرِاعظم پاکستان اور وزارت توانائی کی ہدایات پرلیسکوکے چیف ایگزیکٹو انجینئر شاہد حیدر کی زیر نگرانی لیسکو ریجن میں بجلی چوروں کیخلاف آپریشن بھر پور طریقے سے جاری ہیں۔ لیسکو ترجمان کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے کے مطابق لیسکو میں گیارویں روز کے آپریشن کے دوران تمام سرکل میں 755 کنکشنز بجلی چوری میں ملوث پائے گئے۔504 بجلی چوروں کے خلاف ایف آئی آرز کی درخواستیں متعلقہ تھانوں میں دائر کر دی گئی ہیں جن میں سے222ایف آئی آرز رجسٹرڈ ہو چکی ہیں جبکہ34ملزمان کو گرفتار بھی کیا گیاہے، پکڑے جانے والے کنکشنز میں انڈسٹریل10، کمرشل72، زرعی 4اور669ڈومیسٹک تھے۔تمام کنکشنز منقطع کر کے ان کو777711 یونٹس ڈٹیکشن بل کی مد میں چارج کئے گئے ہیں جن کی مالیت 37491488 (تین کڑورچوہتر لاکھاکانوے ہزار چار سو اٹھاسی)روپے ہے۔
بجلی چوروں کیخلاف کئے جانے والے آپریشن میں بڑے زرعی اور کمرشل صارفین بھی بجلی چوری میں ملوث پائی گئے۔ ان تمام کے کنکشنز بھی منقطع کئے گئے اور ان کو ڈٹیکشن یونٹس چارج کئے گئے تفصیل کے مطابق شاہ خالد ٹاؤن فیروز والا میں کمرشل کنکشن کو9270یونٹس (860000)روپے،لدھے کی میں زرعی کنکشن کو15963 یونٹس(670450)روپے، فیروزوالا میں گھریلو کنکشن کو پکڑے جانے پر6050 یونٹس(500000)روپے،گاندھی پورہ فیروز والا میں ڈائریکٹ سپلائی کو4280یونٹس،(469582)روپے کی رقم چارج کی گئی ہے۔
تفصیل کے مطابق لیسکو ریجن میں گیارہ روز کے آپریشن کے دوران کل4451کنکشن چیک کئے گئے،3845کنکشن کیخلاف ایف آئی آر کی درخواستیں جمع کروائی گئیں جن میں سے2730درخواستیں رجسٹرڈ ہو چکی ہیں۔کل224ملزمان کو گرفتار کیا گیا ہے۔بجلی چوروں کو اب تک9,622,164یونٹس چارج کئے گئے ہیں جن کی رقم (409,452,699)چالیس کڑورچورانوے لا کھ باون ہزارچھے سو ننانوے روپے ہے۔ واضح رہے بجلی چوروں کیخلاف آپریشنز وفاقی پاور ڈویژن کی جانب سے دی گئی ہدایات کے مطابق کیئے جا رہے ہیں اور چیف ایگزیکٹو انجینئر شاہد حیدر بذاتِ خود ان آپریشنز کی نگرانی کر رہے ہیں۔ لیسکو چیف کا کہنا ہے کہ بجلی چوری کے مکمل خاتمے تک بلا تفریق گرینڈ آپریشن جاری رہے گا۔ آپریشن کے دوران بجلی چوروں کے ساتھ ساتھ ان کی سرپرستی کرنیوالے لیسکو افسران و ملازمین کو بھی قانون کے کٹہرے میں لایا جائے گا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Related Articles

Back to top button