پاکستانجرم و سزاسٹی

آئی جی پنجاب ڈاکٹر عثمان انور سے ڈی پی او قصور طارق عزیز سندھو اور انکی ٹیم کی ملاقات

ڈی پی او قصور طارق عزیز سندھو نے پولیس اسٹیشن ڈائریز کے تحت رواں برس ضلعی پولیس کی کارکردگی بارے بریفنگ دی،

قصور پولیس نے رواں برس کے دوران وارداتوں میں لوٹا گیا 22 کروڑ کا مال مسروقہ برآمد کرکے اصل مالکان کے حوالے کیا۔ قصور پولیس نے 10 بلائنڈ مرڈر واقعات سمیت مجموعی طور پر قتل کے 86 مقدمات ملزمان کو گرفتار کرکے حوالات جوڈیشل بھیجا۔

لاہور (خبر نگار، کرائم رپورٹر)انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب ڈاکٹر عثمان انور سے ڈی پی او قصور طارق عزیز سندھو اور انکی ٹیم نے سنٹرل پولیس آفس میں ملاقات کی، ڈی پی او قصور طارق عزیز سندھو نے پولیس اسٹیشن ڈائریز کے تحت رواں برس ضلعی پولیس کی کارکردگی بارے بریفنگ دی،ڈی پی او قصور نے بتایا کہ قصور پولیس نے رواں برس کے دوران ڈکیتوں اور مجرمان سے وارداتوں میں لوٹا گیا 22 کروڑ کا مال مسروقہ برآمد کرکے اصل مالکان کے حوالے کیا۔تھانہ سٹی چونیاں نے اٹھارہ برس سے مفرور 03 خطرناک اشتہاریوں کو کراچی سے گرفتار کیا،قصور پولیس نے 10 بلائنڈ مرڈر واقعات سمیت مجموعی طور پر قتل کے 86 مقدمات ملزمان کو گرفتار کرکے حوالات جوڈیشل بھیجا۔ رابری معہ قتل کے 12 میں سے 11 واقعات کے ملزمان گرفتار کرکے حوالات بھجوائے، بچوں سے متعلقہ جرائم کے 31 مقدمات کے ملزمان گرفتار کئے۔ڈی پی او قصور نے مزیدکہاکہ سیالکوٹ ڈسکہ میں پیش آنے والے دہشت گردی کے واقعہ میں ملوث خطرناک ملزمان کو ضلع قصور سے 4 گھنٹوں کے اندر گرفتار کیا۔

اسی طرح تھانہ صدر پتوکی میں بچے کے اغواء برائے تاوان کے ملزمان کو 03 گھنٹوں میں گرفتار کر کے بچے کو بحفاظت بازیاب کروایا گیا۔
آئی جی پنجاب نے ڈکیتی، قتل سمیت دیگر کیسز کامیابی سے ٹریس کرنے پر قصور پولیس کو شاباش دیتے ہوئے کہاکہ جرائم پیشہ عناصر کے خلاف انٹیلی جنس بیسڈ آپریشنز میں تیزی لائی جائے۔ آئی جی پنجاب نے کہاکہ شہریوں کی جان و مال کے تحفظ اور انسداد جرائم کیلئے جدید ٹیکنالوجی سے بھرپور استفادہ جاری رکھا جائے اور شہریوں کیلئے پبلک سروس ڈلیوری کو موثر حکمت عملی سے مزید آسان بنایا جائے۔ 

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Related Articles

Back to top button