پاکستانتعلیمسٹیسیاستصحت

کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی کے زیر انتظام سوسائٹی آف سرجنز پاکستان لاہور کی جانب سے 21 ویں سالانہ دو روزہ انٹرنیشنل سرجیکل کانفرنس

تقریب کے مہمان خصوصی وائس چانسلر ایف جے ایم یو،صدر کالج آف فزیشنز اینڈ سرجنز پاکستان پروفیسر خالد مسعود گوندل تھے

شعبہ سرجری میں بہترین خدمات سر انجام دینے والے بیسٹ سرجنز کی خدمات کو سراہا گیا. پروفیسر عامر عزیز کی شعبہ آرتھوپیڈک اینڈ سپائن سرجری جبکہ پروفیسر عامر زمان خان کو شعبہ جنرل سرجری میں ان کی بہترین خدمات کے اعتراف میں لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ سے نوازا گیا

لاہور (خبر نگار)کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی کے زیر انتظام سوسائٹی آف سرجنز پاکستان لاہور کی جانب سے 21 ویں سالانہ دو روزہ انٹرنیشنل سرجیکل کانفرنس کی افتتاحی تقریب کا انعقاد کیا گیا۔
تقریب کے مہمان خصوصی وائس چانسلر ایف جے ایم یو،صدر کالج آف فزیشنز اینڈ سرجنز پاکستان پروفیسر خالد مسعود گوندل تھے۔
تقریب میں ملک کے مایہ ناز اور ممتاز سرجنز نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔
اس موقع پر شعبہ سرجری میں بہترین خدمات سر انجام دینے والے بیسٹ سرجنز کی خدمات کو سراہا گیا پروفیسر عامر عزیز کی شعبہ آرتھوپیڈک اینڈ سپائن سرجری جبکہ پروفیسر عامر زمان خان کو شعبہ جنرل سرجری میں ان کی بہترین خدمات کے اعتراف میں لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ سے نوازا گیا۔
صدر سوسائٹی آف سرجنز پاکستان لاہور پروفیسر سید اصغر نقی نے سوسائٹی کی خدمات پر روشنی ڈالی انہوں نے کہا کہ میں وائس چانسلر پروفیسر محمود ایاز کا مشکور ہوں جن کی سرپرستی میں آج کے سیمینار کا انعقاد ہوا میں پروفیسر عامر زمان خان اور پروفیسر عامر عزیز کو مبارکباد دیتا ہوں۔
جنرل سیکرٹری سوسائٹی آف سرجنز ڈاکٹر عمر وڑائچ نے شرکاء کا شکریہ ادا کیا اور سوسائٹی کے زیر اہتمام ہونے والی طبی، تعلیمی اور تحقیقی سرگرمیوں پر شرکاء کو آگاہ کیا۔
پروفیسر رضوان اکرم نے پروفیسر عامر عزیز کی خدمات پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ آپ کا شمار ملک کے مایہ ناز آرتھوپیڈک اور سپائن سرجنز میں ہوتا ہے آپ استادوں کے استاد ہیں آپ کے شاگرد پاکستان سمیت دنیا بھر میں آرتھوپیڈک سرجری کی خدمات فراہم کر رہے ہیں جو کہ آپ کے لئے صدقہ جاریہ ہیں۔ آپ نے 200 سے زائد سپائن سرجنز کو تربیت دی۔سوسائیٹی آف سرجنز پاکستان آپ کی خدمات کے اعتراف میں لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ سے نوازتی ہے۔ اس موقع پر
پروفیسر عامر عزیز کا کہنا تھا کہ میں سب سے پہلے اللہ تعالٰی کا اور اپنے والدین ساتھیوں کی دعاؤں پر مشکور ہوں۔ انہوں نے کہا کہ
ہمارا صحت کا شعبہ تب ہی ترقی کرے گا جب کوئی ڈاکٹر اس کو ہیڈ کرے گا۔
میرا زیر تربیت ڈاکٹرز کو کہنا ہو گا کہ وطن عزیز میں رہتے ہوئے محنت اور ایمانداری سے کام کریں آپ کی دنیا بھی بنے گی آور آخرت بھی۔ انکا مزید کہنا تھا کہ میں آپ سب کا ممنون ہوں جنہوں نے میری حوصلہ افزائی کی۔
پروفیسر سید اصغر نقی نے پروفیسر عامر زمان خان کی خدمات پر روشنی ڈالی پروفیسر عامر زمان وائس چانسلر ایف جے ایم یو، پرو وائس چانسلر اور وائس چانسلر کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی  رہے۔ آپ کی اپنے مادرعلمی اور کالج آف فزیشنز اینڈ سرجنز پاکستان کے لئے بے پناہ خدمات ہیں۔ آپ کے سینکڑوں شاگرد شعبہ سرجری میں خدمات جاری رکھے ہوئے ہیں۔آپ کی بہترین خدمات کے اعتراف میں سوسائٹی آف سرجنز پاکستان آپ کو لائف ٹائم ایچویمنٹ ایوارڈ سے نوازتی ہے۔ اس موقع پر پروفیسر عامر زمان خان کا کہنا تھا کہ میں اللہ تعالٰی کا بے حد مشکور ہوں اور ان سب کامیابیوں میں میری والدہ کی دعائیں شامل ہیں۔ میں اپنے استاد پروفیسر ظفر اللہ چوہدری اور دیگر اساتذہ کا بھی مشکور ہوں جن کی تربیت سے میں اس مقام پر پہنچا۔ میرے بہت ہی اچھے دوست پروفیسر محمود ایاز اور پروفیسر خالد مسعود گوندل کا میری زندگی میں نہایت مخلصانہ رول رہا جس پر میں تہہ دل سے مشکور ہوں۔
وائس چانسلر کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر محمود ایاز نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آج ہم سب جس مقام پر ہیں اپنے اساتذہ اکرام کی بدولت ہیں ان کی وجہ سے ہمیں علم کی دولت میسر ہوئی رہنمائی ملی۔ آج کے اس تاریخی 163 سالہ طبی درسگاہ کی سربراہی کرنا میرے لئے بہت اعزاز کی بات ہے یہ ادارہ طبی تعلیم کی روشنی دیتا ہے جس کے فارغ التحصیل پوری دنیا میں اپنے ادارے کا نام روشن کر رہے ہیں ان کا کہنا تھا کہ مستقبل میں کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی کے زیر اہتمام ربوٹک سرجری کی تربیت اور میو ہسپتال میں ربوٹک سرجری شروع کی جائے گی جس کے لئے حکومتی تعاون جاری ہے
میری خواہش ہے کہ طبی تعلیم و تربیت کا کلچر عام ہو۔ پروفیسر عامر زمان اور پروفیسر عامر عزیز کو ان کی بہترین خدمات پر مبارکباد دیتا ہوں آپ دونوں کی اپنے اپنے شعبہ جات میں نمایاں اور قابل قدر خدمات ہیں اور آپ دونوں کی بہترین خدمات کے ہم سب معترف ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ میں پروفیسر سید اصغر نقی اور پروفیسر ابرار اشرف علی کی کاوشوں کو سراہتا ہوں جنہوں نے آج کی تقریب کامیاب بنائی۔
چیف گیسٹ پروفیسر خالد مسعود گوندل نے کالج آف فزیشنز اینڈ سرجنز پاکستان کی طبی خدمات پر روشنی ڈالی ان کا مزید کہنا تھا کہ آج کی یہ تقریب جن لوگوں کے لئے منعقد کی گئی وہ اس اعزاز کے حقدار ہیں ان کی خدمات کے ہم معترف ہیں اور مبارکباد دیتے ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ آپ لوگوں کے شاگرد خیبر سے کراچی تک ہیں آپ کا نام اور مقام پاکستان سمیت دنیا بھر میں ہے جو کہ آپ کے لئے صدقہ جاریہ ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ میرا سب کے لئے ایک ہی پیغام ہے کہ یہ دنیا فانی ہے اس دنیا

میں رہتے ہوئے جانے سے پہلے اس طرح تیاری کرنی چاہیے کہ آپ کے شاگرد اور آپ کے مریض آپ کے لئے صدقہ جاریہ ہوں۔

اس موقع پر پروفیسر مختار حسن رندھاوا، پروفیسر قاضی محمد سعید، پروفیسر انجم حبیب وہرا، پروفیسر محمودشوکت، پروفیسر مجید چوہدری، پروفیسر زہرہ خانم، پروفیسر صداقت علی خان، پروفیسر عائشہ شوکت، پروفیسر محمد طیب، پروفیسر تحریم فاطمہ، پروفیسر بسمہ خان، پروفیسر فاروق افضل، پروفیسر امیر افضل، پروفیسر یار محمد، پروفیسر وارث فاروقہ، ،پروفیسر اجمل فاروق، پروفیسر محمد سلیم، پروفیسر احمد عزیر قریشی، پروفیسر شہزاد شمس، پروفیسر مستحسن بشیر، پروفیسر ہارون جاوید، ڈاکٹر طلعت وسیم، پروفیسر فاروق احمد رانا، ڈاکٹر ریاست علی، ڈاکٹر سید باقر حسین، ڈاکٹر حنا خان سمیت ملک بھر سے شعبہ سرجری سے تعلق رکھنے والے پروفیسرز اور ڈاکٹرز کی کثیر تعداد موجود تھی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Related Articles

Back to top button