پاکستانجرم و سزاسٹی

لاہور الیکٹرک سپلائی کمپنی کی انسداد بجلی چوری مہم

15808 ملزمان کو گرفتار ،32930ملزمان کے خلاف مقدمہ درج۔

لاہور (خبر نگار)
وزارت توانائی پاور ڈویڑن کی ہدایت کے مطابق چیف ایگزیکٹو لیسکو انجینئر شاہد حیدر کی زیر نگرانی انسداد بجلی چوری مہم کامیابی کے ساتھ جاری ہے۔93 روز سے جاری آپریشن کے دوران کل34608 ملزمان بجلی چوری میں ملوث پائے گئے جن میں سے 34219 ملزمان کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواستیں جمع کروائی گئیں،32930 ملزمان کے خلاف مقدمات درج کروا کر15808 ملزمان کو گرفتار بھی کرکیا گیا۔ بجلی چوروں کو اب تک57310004 (پانچ کروڑتہتر لاکھ دس ہزار چار) یونٹس چارج کئے گئے ہیں جن کی مالیت 2224222184(دو ارب بائیس کروڑبیالیس لاکھ بائیس ہزار ایک سو چوراسی روپے) ہے۔
گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ریجن بھر میں 206 ملزمان بجلی چوری میں ملوث پائے گئے، تمام بجلی چوروں کے خلاف ایف آرز کی درخواستیں متعلقہ تھانوں میں دائرکی گئیں جس میں سے89 درخواستیں رجسٹرڈ ہوچکی ہیں جبکہ 2 ملزمان کو گرفتار بھی کرلیا گیا ہے۔ پکڑے جانے والے کنکشنز میں 2 زرعی،9 کمرشل اور 195 ڈومیسٹک تھے۔ تمام کنکشنز منقطع کرکے ان کو219182 (دولاکھ انیس ہزارایک سوبیاسی) یونٹس ڈٹیکشن بل کی مد میں چارج کئے گئے ہیں جن کی مالیت7403427 (چوہتر لاکھ تین ہزار چار سو ستائیس) روپے ہے۔
بجلی چوروں کیخلاف کئے جانے والے آپریشن میں بڑے کمرشل صارفین بھی بجلی چوری میں ملوث پائے گئے۔ ان تمام کے کنکشنز بھی منقطع کئے گئے اور ان کو ڈٹیکشن یونٹس چارج کئے گئے۔ٹبی سٹی کے علاقے میں کنکشن کو 200000 روپے،شاہدرہ ٹاؤن کے علاقے میں کنکشن کو 153600 روپے،فیکٹری ایریا کے علاقے میں کنکشن کو150000 روپے اورشاہدرہ ٹاؤن کے ہی ایک اور ملزم کو130000 کی رقم چارج کی گئی ہے۔
واضح رہے بجلی چوروں کیخلاف آپریشنز وفاقی پاور ڈویڑن کی جانب سے دی گئی ہدایات کے مطابق کیئے جا رہے ہیں اور چیف ایگزیکٹو انجینئر شاہد حیدر بذاتِ خود ان آپریشنز کی نگرانی کر رہے ہیں۔ لیسکو چیف کا کہنا ہے کہ بجلی چوری کے مکمل خاتمے تک بلا تفریق گرینڈ آپریشن جاری رہے گا۔ آپریشن کے دوران بجلی چوروں کے ساتھ ساتھ ان کی سرپرستی کرنیوالے لیسکو افسران و ملازمین کو بھی قانون کے کٹہرے میں لایا جائے گا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Related Articles

Back to top button