پاکستانسٹیسیاست

چوہدری فواد حسین کی جانب سے الیکشن کمیشن اور چیف الیکشن کمشنر پر لگائے گئے تمام الزامات کو جھوٹ کا پلندہ قرار: ترجمان الیکشن کمیشن

لاہور (خبرنگار)ترجمان الیکشن کمیشن نے چوہدری فواد حسین کی جانب سے الیکشن کمیشن اور چیف الیکشن کمشنر پر لگائے گئے تمام الزامات کو جھوٹ کا پلندہ قرار دیتے ہوئے ان کی سختی سے تردید کی ہے۔ الیکشن کمیشن میں تمام بھرتیاں قواعد و ضوابط کے تحت مکمل طور پر شفاف طریقے سے کی گئی ہیں اور کمیشن کے کسی بھی بڑے عہدیدار کے رشتہ دار کو بھرتی نہیں کیا گیا۔ اسی طرح الیکشن کمیشن میں جتنے بھی ٹیکنیکل اور پروفیشنل افراد کو لگایا گیا ہے ان کو re employement policy کے تحت اور قواعد و ضوابط پر عمل کرتے ہوئے لگایا گیا ہے۔ ری ایمپلائمنٹ کے علاوہ جہاں پر بھی اشتہار کی ضرورت تھی اس کے بغیر کوئی بھرتی نہیں کی گئی۔ الیکشن کمیشن نے اپنے دفاتر کے لئے کوئی بھی نجی اراضی ( private land) نہیں خریدی ۔کمیشن کے تمام دفاتر صرف سرکاری زمین ( state land) پر بنائے گئے ہیں اور کسی قسم کی پرائیویٹ transaction نہیں کی گئی۔ سرگودھا کا دفتر پنجاب حکومت کی زمین پر بنایا جا رہا ہے جو کہ پی ٹی آئی کی حکومت میں الیکشن کمیشن کو دی گئی تھی۔ اس کے علاوہ جو بھی زمین دفاتر کے لئے حاصل کی گئی ہے وہ پنجاب حکومت سے سرکاری نرخوں پر پی ٹی آئی کی حکومت میں حاصل کی گئی جس کی قیمت وفاقی حکومت کے خزانے سے پی ٹی آئی کے دورِ حکومت میں پنجاب حکومت کو منتقل کی گئی۔ جھوٹے الزام لگانے والوں کو اپنے ماضی پر نظر رکھنی چاہیے اور اپنے گریبان میں ضرور جھانکنا چاہیے اور اس غلط فہمی کو بھی دور کر لینا چاہیے کہ ان اوچھے ہتھکنڈوں سے الیکشن کمیشن کسی قسم کے دباؤ میں نہیں آئے گا۔ الزام لگانے والے کو معلوم ہو کہ الیکشن کمیشن کی لائبریری میں سینئر ایڈووکیٹ حامد خان صاحب کی کتاب موجود ہے۔ ماضی قریب میں کمیشن کے سامنے معذرت نامہ پیش کرنے والوں کو ایسی باتیں زیب نہیں دیتیں۔انشاللہ ! تمام سازشی عناصر اپنے مذموم مقاصد میں ناکام ہوں گے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Related Articles

Back to top button